.
.
.
.

مصر کی صدارت کے لیے محمد مرسی اور احمد شفیق کے درمیان حتمی مقابلہ

صدارتی انتخاب کے پہلے مرحلے میں اخوان کے امیدوار کی برتری

نشر في:

مصر کے الیکشن کمیشن نے صدارتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے نتائج کا اعلان کردیا ہےجن کے مطابق اخوان المسلمون کے صدارتی امیدوار ڈاکٹر محمد مرسی نے سب سے زیادہ ووٹ حاصل کیے ہیں اور اب دوسرے مرحلے میں ان کا مقابلہ سابق وزیر اعظم احمد شفیق سے ہو گا۔

الیکٹورل کمیشن کے صدر فاروق سلطان نے سوموار کو ایک نشری نیوز کانفرنس میں صدارتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے نتائج کا اعلان کیا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ پہلے مرحلے میں ووٹ ڈالنے کی شرح چھیالیس اعشاریہ دو فی صد رہی ہے۔

انھوں نے کہا کہ کوئی بھی امیدوار کامیابی کے لیے درکار پچاس فی صد یا اس سے زیادہ ووٹ حاصل نہیں کرسکا ہے۔اس لیے اب صدارتی الیکشن کے قانون کی دفعہ چالیس کے تحت ڈاکٹر محمد مرسی اور احمد شفیق کے درمیان رن آف مقابلہ ہوگا۔انھوں نے بتایا کہ اخوان کے امیدوار نے 5764952 ووٹ حاصل کیے ہیں اورسابق وزیراعظم احمد شفیق کے حق میں 5505327ووٹ ڈالے گئے تھے۔

بائیں بازو کے امیدوارحمدین صباحی تیسرے نمبر پر رہے ہیں اور انھوں نے اڑتالیس لاکھ ووٹ حاصل کیے۔بعض اسلامی جماعتوں کے حمایت یافتہ اعتدال پسند صدارتی امیدوار عبدالمنعم ابو الفتوح چوتھے نمبر پر رہے ہیں۔ ان کے حق میں چالیس لاکھ پانچ ہزار ووٹ ڈالے گئے۔سابق وزیر خارجہ اور عرب لیگ کے سابق سیکرٹری جنرل عمرو موسیٰ پانچویں نمبر پر رہے ہیں اور وہ پچیس لاکھ اسی ہزار ووٹ لے سکے ہیں۔

مصر میں بعد از انقلاب منعقدہ ان صدارتی انتخابات میں کل بارہ امیدواروں کے درمیان مقابلہ تھا۔ صدارتی انتخابات کے لیے دوسرے مرحلے کی پولنگ 16 اور17 جون کو ہو گی جبکہ مصری تارکین وطن کے لیے دوسرے مرحلے کی پولنگ 3 اور9 جون کے درمیان ہوگی اور 21 جون کو صدارتی انتخابات کے حتمی نتائج کا اعلان کیا جائے گا۔